جمعرات, 29, ستمبر, 2022
ہوماعلان واشتہاراتایس ڈی پی آئی کے ریاستی صدر نے حکومت کی طرف سے...

ایس ڈی پی آئی کے ریاستی صدر نے حکومت کی طرف سے اے ایم یو کی گرانٹ کی رقم میں کمی کے خلاف مرکزی وزیر تعلیم کو خط لکھا

 رقم میں کمی کے خلاف مرکزی وزیر تعلیم کو خط لکھا
علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کی ترقیاتی گرانٹ بڑھا کر 100 کروڑ کرنے کا مطالبہ

لکھنؤ (پریس ریلیز) – سوشل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا، اتر پردیش کے صدر نظام الدین خان نے مرکزی وزیر تعلیم دھرمیندر پردھان کو ایک خط لکھ کر کہا ہے کہ مرکزی یونیورسٹیوں کو کیمپس ڈیولپمنٹ، لائبریریز، لیبارٹریز وغیرہ جیسی سہولیات کی دیکھ بھال وغیرہ کیلئے مرکزی وزرات تعلیم کی طرف سے مرکزی یونیورسٹیوں کو ایک سالانہ گرانٹ دی جاتی ہے تاکہ اسے برقرار رکھا جاسکے اور اسے آسانی سے چلایا جاسکے۔ اسی کڑی میں علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کو اس سیشن میں صرف 9 کروڑ روپے کا بجٹ مختص کیا گیا ہے، جبکہ اس بجٹ کو تعلیمی سیشن
2017۔2018 میں 62 کروڑ روپے دیا گیا تھا، بجٹ میں یہ کٹوتی 2018 سے ہی جاری ہے۔ جو کہ تعلیمی سال 19۔ 2018 میں اسے 62 کروڑ سے کم کرکے 22 کروڑ کردیا گیا۔ اگلے سیشن 20۔2019 میں اسے مزید کم کر کے 16 کروڑ، اگلے سیشن21۔2020 میں 14 کروڑ، اگلے سیشن 22-2021 میں 10 کروڑ اور موجودہ سیشن 23-2022 میں مزید کم کر کے 9.25 کر دیا گیا ہے۔جبکہ ریاست کی کسی دوسری مرکزی یونیورسٹی کی گرانٹ میں کوئی کٹوتی نہیں کی گئی ہے۔ایس ڈی پی آئی ریاستی صدر نظا م الدین خان نے اس بات کی طرف خصوصی نشاندہی کرتے ہوئے کہا ہے کہ علی گڑھ یونیورسٹی کی عالمی درجہ بندی 801 ہے، جبکہ یہ حکومت ہند کی اپنی درجہ بندی میں 10 ویں مقام پر ہے اور یہ انڈیا ٹوڈے کی طرف سے جاری کردہ سرکاری یونیورسٹیوں کی درجہ بندی میں چوتھے مقام پر ہے۔ جو اس یونیورسٹی کے اعلیٰ تعلیمی معیار کی تصدیق کرتا ہے۔ ایسے میں ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ حکومت اسے مالی طور پر مضبوط کرتی اور بہتر تعلیمی بلندیوں کو حاصل کرنے کے لیے اس کی حوصلہ افزائی کرتی۔ * انہوں نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کی گرانٹ کی رقم میں کمی کی وجہ سے یونیورسٹی کے معمولی تعمیراتی کاموں، تحقیقی کاموں کے لیے سازوسامان، یونیورسٹی کیمپس کی ترقی، بجلی کی فراہمی اور کیمپس میں اس کی دیکھ بھال، سڑکیں اور عمارتیں متاثر ہوئی ہیں۔ کیمپس وغیرہ کی مرمت اور دیکھ بھال پر خاصا اثر پڑے گا اور تعلیم کی سطح متاثر ہوگی۔ ایس ڈی پی آئی ریاستی صدر نظام الدین خان نے مرکزی وزارت تعلیم کو مکتوب کے ذریعہ علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کی ترقیاتی گرانٹ کو بڑھا کر 100 کروڑ روپے کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

توحید عالم فیضی
توحید عالم فیضیhttps://www.nawaemillat.com
روزنامہ ’نوائے ملت‘ اپنے تمام قارئین کو اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ وہ خود بھی مختلف مسائل پر اپنی رائے کا کھل کر اظہار کریں اور اس کے لیے ہر تحریر پر تبصرے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ جو بھی ویب سائٹ پر لکھنے کا متمنی ہو، وہ روزنامہ ’نوائے ملت‘ کا مستقل رکن بن سکتے ہیں اور اپنی نگارشات شامل کرسکتے ہیں۔
کیا آپ اسے بھی پڑھنا پسند کریں گے!

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

- Advertisment -spot_img
- Advertisment -
- Advertisment -

مقبول خبریں

حالیہ تبصرے