امریکہ میں عاشر ھدیٰ نے پہلا روزہ رکھا

84

ہیوسٹن (امریکہ) میں مقیم فراز ھدیٰ کے چھوٹے بیٹے عاشر ھدیٰ جو کہ معروف صحافی اور افسانہ نگار ڈاکٹر سیّد احمد قادری کے نواسے ہیں ، انھوں نے چھہ سال کی عمر میں ستائیسویں روزہ کو پہلا روزہ رکھ کر اللہ تعالیٰ کے حکم کی تعمیل کی ۔ماشا اللہ ۔ عاشر ھدیٰ نے ستائیسویں کی شب میں پوری رات عبادت کی اور روایت کے مطابق سحری کھا کر اپنے پہلے روزہ کی نیّت کی ۔ پندرہ گھنٹے سے زائد وقفہ کے بعدافطار کے وقت عاشر کو والدین ، نانا نانی، دادا دای اور بھائی بہنوں کی جانب سے پہلے روزہ کشائی کے خاص موقع پر حسب روایت ڈھیر سارے تحائف بھی ملے اور اپنے پہلے روزہ کے افطار کے بعد یہ پوچھے جانے پر کہ پہلا روزہ کیسا لگا ، انھوں نے کہا کہ بہت اچھا لگا اور میں اب آگے بھی روزہ رکھونگا انشا اللہ۔امریکہ میں مغربی تہذیب کے درمیان اپنے اسلامی تشخص کو برقرار رکھنے کی ایسی مثالیں یقیناََ خوش کرنے والی ہیں ۔ عاشر کے پہلے روزہ رکھنے اور اس کی ترغیب دئے جانے پر عاشرکے والد فراز ھدیٰ، والدہ ثمرین ھدیٰ کو بہت سارے رشتہ داروں کے ساتھ عاشر کے دادا جناب خورشید ا لھدیٰ، پاٹلی پترا، پٹنہ، دادی محترمہ نسرین ھدیٰ ، نانا ڈاکٹر سیّد احمد قادری نانی ڈاکٹر شہناز پروین، پر دادا جناب بدر اورنگ آبادی نے ڈھیر ساری دعائیں اور مبارکباد دیتے ہوئے عاشر کی اقبال مندی ، دین اور دنیا کی ترقی اور ہمیشہ خوش اور تندرست رہنے کی خصوصی دعأ دی ہے ۔ اللہ تعالیٰ ان تمام لوگوں کی دعاؤں کو قبول کرے اور عاشر ھدیٰ کو اسی طرح اللہ کے احکام پر چلنے کی توفیق دے ۔ آمین ثم آمین۔

٭٭٭٭٭٭٭