بدھ, 5, اکتوبر, 2022
ہوماعلان واشتہاراتامارت شرعیہ اورامیر شریعت ثامن:مفتی محمد نظر الباری الندوی

امارت شرعیہ اورامیر شریعت ثامن:مفتی محمد نظر الباری الندوی

دربھنگہ (پریس ریلیز)

امارت شرعیہ بہار اڈیسہ و جھارکھنڈ ایک باوقار دینی شرعی ادارہ ہے اس ادارے کی سوسالہ خدمات تقریباً زندگی کے ہر شعبے میں اظہر من الشمس ہے

امراء امارت شرعیہ نے اپنے اپنے دور میں حالات اور وقت کے تحت اسکو مزید ترقی ووسعت دینے کی کوششیں کیں یہاں تک کہ امارت کا ہر ہر شعبہ اسوقت ایک ادارے کی شکل میں فعال و متحرک ہے

یہ ایک ایسا منفرد ادارہ ہے جو قوم و ملت اور ملک میں اپنا ایک الگ پہچان اور شناخت رکھتا ہے یہی وجہ ہے کہ لوگ اس کو عزت اور قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں

اسوقت امارت شرعیہ کے امیر شریعت ثامن حضرت مولانا احمد ولی فیصل رحمانی دامت برکاتہم العالیہ منتخب ہوئے ہیں آپ کی شخصیت ایک ایسے عظیم المرتبت خاندان سے تعلق رکھتی ہے جن کے آباؤ و اجداد نےہر موڑ پر قوم وملت کی دینی شرعی’قومی’سماجی اور سیاسی رہنمائی و ترجمانی ہی نہیں کی بلکہ گراں قدر ناقابل فراموش خدمات انجام دیں ہیں آپ ہی کے والد’دادا’اور پردادا کی محنتوں اور کوششوں سے عالمی شہرت یافتہ دارالعلوم ندوۃ العلماء لکھنؤ’خانقاہ رحمانی جامعہ رحمانی مونگیر آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ رحمانی ٣٠ رحمانی فاؤنڈیشن ‘ امارت پبلک اسکول ایک تناور درخت کی شکل میں قوم وملت کو سیراب کر رہا ہے۔اورآپکےدادااوروالدنے امارت شرعیہ کوجس بلندی تک پہونچا نے کا کام کیا وہ اپنی مثال آپ ہے

مذکورہ باتیں امام و خطیب مرکزی جامع مسجد پالی الحاج مفتی محمد نظر الباری الندوی مھتمم مدرسہ اسلامیہ پالی نائب صدر جمعیت علماء دربھنگہ صدر تنظیم امارت شرعیہ گھنشیام پور وسکریٹری اردو کارواں کمیٹی دربھنگہ نےاپنے ایک صحافتی بیان میں کہا۔ حضرت مفتی صاحب نے زور دے کر کہا نئے امیر شریعت بھی اپنے آباء واجداد کے نقش قدم پر چلتے ہوئے قوم وملت اور امارت شرعیہ کے لئے مفید سے مفید ثابت ہونگے انہوں نے کہا نئے امیر شریعت ایک نیا جذبہ نیا حوصلہ نئے عزم و ارادے کے ساتھ امارت شرعیہ کی تعمیر وترقی کے لئے کام کریں گے نائب صدر جمعیت علماء نے کہا حضرت امیر شریعت اور نائب امیر حضرت مولانا محمد شمشاد رحمانی قاسمی استاد دارالعلوم وقف دیوبند دونوں جواں سال ہیں اور بزرگوں کے تپائے ہوئے تربیت یافتہ ہیں ان شاء اللہ امارت کے شعبوں میں مزید ترقی اور وسعت ہوگی، موصوف نے کہا کہ ہم سبھوں کو اختلاف و افتراق کا ماحول بنانے سے گریز کرنا چاہیے اور امیر شریعت کا تعاون کرکے امارت شرعیہ کی افادیت کو عام کرنے میں اپنا کردار ادا کرنا چاہیے،انہوں نے دعا کرتے ہوئے کہا کہ اللہ تعالیٰ نظر بد سے ادارے کی حفاظت فرمائے اور خیر کا فیصلہ فرما ئے آمین

روزنامہ نوائے ملت
روزنامہ نوائے ملتhttps://www.nawaemillat.com
روزنامہ ’نوائے ملت‘ اپنے تمام قارئین کو اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ وہ خود بھی مختلف مسائل پر اپنی رائے کا کھل کر اظہار کریں اور اس کے لیے ہر تحریر پر تبصرے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ جو بھی ویب سائٹ پر لکھنے کا متمنی ہو، وہ روزنامہ ’نوائے ملت‘ کا مستقل رکن بن سکتے ہیں اور اپنی نگارشات شامل کرسکتے ہیں۔
کیا آپ اسے بھی پڑھنا پسند کریں گے!

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

- Advertisment -spot_img
- Advertisment -
- Advertisment -

مقبول خبریں

حالیہ تبصرے