الحاج حسن احمدقادری کا انتقال ملت اسلامیہ کے لئے عظیم خسارہ:محمداطہرالقاسمی جنرل سکریٹری جمعیت علماء ارریہ

44

ارریہ
جمعیت علماء بہار ( مولانا ارشد مدنی)کے جنرل سکریٹری الحاج حسن احمد قادری اللہ کو پیارے ہوگئے۔اموات کے تسلسل کے درمیان ان کی علالت کی آج تک کوئی خبر سوشل میڈیا پر نظر نہیں آئی،آج جمعیت علماء ارریہ گروپ میں جب ان کی رحلت کی خبر پڑھی تو دل پر سکتہ طاری ہو گیا۔بغرض تسلی ان کے بھتیجے حضرت مولانا سید مشہود احمد قادری پرنسپل مدرسہ اسلامیہ شمس الہدیٰ پٹنہ نائب سیکرٹری جمعیت علماء بہار سے رابطہ کیا تو انہوں نے خبر کی تصدیق کرتے ہوئے بتایاکہ ہاں وہ اللہ کو پیارے ہوگئے ہیں اور بعد نماز مغرب ان کا جنازہ ہے۔
اناللہ وانا الیہ رجعون۔
قادری صاحب کی رحلت سے ریاست بہار نے اپنے ایک عظیم سرمایہ کو کھودیا ہے۔موصوف خانوادہ مدنی کے ہردالعزیز ریاستی جمعیت کے ایک مخلص،جرات مند،بالغ نظر،وسیع الخیال اور قومی وملی مسائل و معاملات پر بیدار مغز شخص تھے۔ان کی شخصیت حکومت بہار کی نظر میں بھی ایک باوقار چہرہ مانا جاتا تھا۔اسی لئے جب کبھی ریاست بہار کے ملی مسائل پر ریاست کی ملی جماعتوں کا کوئی مشترکہ مشورہ ہوتا تھا تو حاجی صاحب مرحوم کی شرکت لازمی سمجھی جاتی تھی۔مدنی مسافر خانہ پٹنہ جنکشن پر ریاستی جمعیت کے آفس میں کئی بار ان سے ملاقات ہوئی تھی۔انہیں جمعیت علماء ہند کی تاریخ،قربانیاں اور کارنامے اس قدر یاد رہتے کہ گویا وہ جمعیت کی تاریخ کے حافظ ہوں۔
انہیں ضلع ارریہ سے بےانتہا محبت تھی۔اس لئے ان کے یہاں ارریہ کے نام سے جو پہنچتا وہ ان کی بڑی عزت کرتے تھے۔ابھی گذشتہ ودھان سبھا کے الیکشن میں احقر سے فون پر تفصیلی بات ہوئی تھی۔ان کی گفتگو سے محسوس ہوتا تھا کہ وہ ریاست بہار کے ساتھ بطور خاص سیمانچل اور ارریہ میں سیکولرازم کی بقاء کے لئے کس قدر فکرمند رہتے تھے۔
قحط الرجال کا دور اور اکابرین علماء اور بالغ نظر ملی شخصیات کی رحلت کے تسلسل میں جناب الحاج حسن احمد قادری علیہ الرحمہ کا اچانک رخصت ہوجانا ملت اسلامیہ،ریاست بہار کے مسلمانوں اور جمعیت علماء بہار کے لئے ایک بڑا سانحہ ہے۔
خداوندعالم انہیں کروٹ کروٹ جنت نصیب کرے،ان کے سیآت کو حسنات سےمبدل فرمائے اور ریاستی مسلمانوں کے ساتھ جمیعت علماء بہار کو ان کا نعم البدل عطافرمائے!
تعزیت کرنے والوں میں جمعیت علماء ارریہ کے سرپرست الحاج بذل الرحمن،صدر ڈاکٹر عابد حسین،مولانا فاروق مظہری،مولانا شاہد عادل قاسمی،مولانا مصور عالم ندوی،مفتی ہمایوں اقبال ندوی نائبین صدور۔مولانا فیروز نعمانی،مولانا اکبر صادق ندوی،الحاج عابد حسین،جناب قمر الہدیٰ نائبین سکریٹری،خازن ماسٹر شاکر حسین اور آفس سکریٹری مولانا حدیث اللہ نصر بھاگل پوری کے علاوہ تمام اراکین و رضاکاران شامل ہیں۔