جمعرات, 6, اکتوبر, 2022
ہوماعلان واشتہاراتاسوہ نبوی صلی اللہ علیہ وسلم کے مطابق اپنی زندگی ڈھالئے!

اسوہ نبوی صلی اللہ علیہ وسلم کے مطابق اپنی زندگی ڈھالئے!

(عمرفاروق قاسمی) مؤرخہ 29/اکتوبر 2021؁ء بروز جمعہ سجاد نگر گرہوتیہ میں علماء کے ایک وفد نے دورہ کیا اور وہیں کی مسجد میں نماز جمعہ ادا کی جمعہ سے قبل مولانا عمرفاروق قاسمی نے عوام سے خطاب کیا جس میں عمل صالح کی تلقین کی اور فرمایا کہ اسوۂ نبی کے مطابق اپنے آپ کو ڈھالنے کی کوشش کریں پھر مولانا موصوف نے ہی نماز جمعہ پڑھائی بعدهٗ حضرت قاری نجیب‌الرحمن صاحب بھاگلپوری کارگزار صدر جمعیۃ علماء شہر مرادآباد نے جمعیۃ کی خدمات کو بیان کیا اور بھاگلپور میں فساد کے موقع پر فدائے ملت حضرت مولانا سید محمد اسعد مدنی نوراللہ مرقدہ کی خدمات کا تذکرہ کیا کہ کس طرح مولانا مدنیؒ نے مسلمانوں کی حفاظت کی اور مسلسل ایک مہینے تک بھاگلپور میں قیام کیا اور دورہ کرتے رہے کئی مرتبہ حضرت کو شرپسندوں نے روکنے کی کوشش کی لیکن حضرت سینہ سپر ہوکر کھڑے ہوگئے لیکن بزدلوں کی ہمت نہ ہوئی کہ حضرت کو ہاتھ بھی لگاسکیں کیونکہ وہ حضرت کی شخصیت سے واقف تھے ان کے بعد حاجی مولانا عبدالرقیب آزاد صاحب نے بیان کیا اور فرمایا کہ حالات اتنے سنگین ہوگئے ہیں کہ ہر کوئی مسلمان پر انگلی اٹھاتا ہے اس کی وجہ یہ ہے کہ مسلمانوں نے احکام خداوندی پر عمل کرنا چھوڑدیا ہے اور اغیار کے طریقے کو اپنا لیا ہے جس کی وجہ سے رحمت نے بھی اپنا منھ موڑ لیا خاص طور پر اس جانب توجہ دلائی کہ اپنی بچے بچیوں کا نکاح سادگی سے کریں خرچ میں اکتفا سے کام لیں فضول خرچی سے پرہیز کریں جہیز کے رسم ورواج کو ختم کرنے کی کوشش کریں کیونکہ اسی کی وجہ سے آج کتنی غریب گھر کی لڑکیاں ازدواجی زندگی سے دور ہیں اسی ناسور کی وجہ سے کتنی بچیاں خود کشی کرنے پر مجبور ہیں اسی ضمن میں ایک واقعہ سنایا جس سے ہمیں سبق حاصل کرنا چاہیے بتایا کہ ایک شخص نے اپنی لڑکی کی شادی کرنی چاہی اور کئی جگہ تذکرہ کیا تو ایک لڑکے کی طرف سے پیغام نکاح آیا اور ساتھ ہی ساتھ جہیز میں قیمتی سامان کا مطالبہ کیا اس شخص نے قبول کرلیا اس کے بعد ایک اور لڑکے کا پیغام آیا جس نے صرف لڑکی مانگی جہیز کا کوئی تذکرہ ہی نہیں کیا اس نے اس کو بھی قبول کرلیا جب نکاح کا وقت ہوا تو ایک کو لڑکی کے ساتھ رخصت کیا اور ایک کو سامان دے کر رخصت کیا اور کہا جو جس کا طالب تھا وہ اس کو مل گیا اب ہر ایک رخصت ہوجائے ، اس سے آپ اندازہ لگایئے کہ سماج میں اس کی کتنی رسوائی ہوئی ہوگی اس لیے رسوائی سے بچنے کےلیے اس ناسور کو ہی ختم کرنا ہے پھر قاری نجیب‌الرحمن صاحب کی دعاء پر مجلس کا اختتام ہوا ۔

اس موقع پر خصوصاً مولانا تاج‌الدین صاحب کوروڈیہ، حافظ اظہار صاحب سرام پور ڈیہہ، مولانا سعدالرحمن صاحب کوروڈیہ، ماسٹر نعمان صاحب گرہوتیہ، ڈاکٹر اقبال صاحب، مولانا تاج‌الدین صاحب قاسمی انکے علاوہ کثیر تعداد میں علماء وعوام شریک تھے ۔

توحید عالم فیضی
توحید عالم فیضیhttps://www.nawaemillat.com
روزنامہ ’نوائے ملت‘ اپنے تمام قارئین کو اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ وہ خود بھی مختلف مسائل پر اپنی رائے کا کھل کر اظہار کریں اور اس کے لیے ہر تحریر پر تبصرے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ جو بھی ویب سائٹ پر لکھنے کا متمنی ہو، وہ روزنامہ ’نوائے ملت‘ کا مستقل رکن بن سکتے ہیں اور اپنی نگارشات شامل کرسکتے ہیں۔
کیا آپ اسے بھی پڑھنا پسند کریں گے!

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

- Advertisment -spot_img
- Advertisment -
- Advertisment -

مقبول خبریں

حالیہ تبصرے