آخر مسلمانوں پر اس طرح کے حالات کب تک آتےرہیں گے؟ انوار الحق قاسمی

62

آخر مسلمانوں پر اس طرح کے حالات کب تک آتےرہیں گے؟
انوار الحق قاسمی
آج مسلمانوں پر جو یہ حالات آئے ہیں ، کہ جہاں کہیں بھی مسلمان تنہاغیروں کے نرغے میں پھنس جاتے ہیں ،تو وہاں سے پھران کا صحیح سالم نکل جانا ایک بہت ہی مشکل امر ہوگیاہے۔
جب تک یہ اسلام دشمن لوگ اس معصوم مسلمان کے ساتھ خوب زد و کوب نہیں کرلیتےہیں اور سنت رسول -صلی اللہ علیہ و سلم -یعنی داڑھی کوجڑسے نہیں کاٹ دیتےہیں ،اس وقت تک انہیں چین و سکون میسر نہیں ہوتاہے۔
ابھی حال ہی میں جو غازی آباد میں ایک 72سالہ بزرگ کے ساتھ دردناک مارپیٹ اور قینچی سے داڑھی کاٹنے کاجو واقعہ پیش آیا ہے، وہ انتہائی تکلیف دہ ہے،اس کی جتنی بھی مذمت کی جائےبہت ہی کم ہے۔
سوال یہ ہے کہ آخر مسلمانوں کے ساتھ اس طرح کے دل سوز واقعات کب تک پیش آئیں گے؟
اس سوال کاجواب یہ ہے کہ جب تک مسلمان اپنے اندر سیاسی شعور پیدا نہیں کریں گے اور سیاست میں بڑھ چڑھ حصہ نہیں لیں گے،اسی طریقہ سے جب تک مسلمان باہم متحد اور متفق نہیں ہوں گے ،اس وقت تک ان پر اس طرح کے حالات آتے ہی رہیں گے۔
اگر مسلمان ہندوستان میں باعزت اور پرسکون زندگی گزارناچاہتے ہیں ،تو پھر انہیں اپنے اندر سیاسی شعور پیداکرنے کےساتھ ساتھ تمام آپسی نزاعات واختلافات کو ختم کرناہوگا،اس کے بغیر باعزت و پرسکون زندگی گزارنا انتہائی مشکل ہے۔